گیارہ سالہ پاکستانی بچے کا کارنامہ

کراچی: پاکستان کے 11 سالہ بچے نے ڈرون تیار کرکے دنیا کو حیران کردیا اور اس کا تیار کردہ ڈرون 1500 فٹ کی بلندی تک پہنچ سکتا ہے۔11 سالہ بلال احمد کا تعلق کراچی سے ہے اور وہ اسکول کا طالب علم ہے

بلال کو الیکٹرانکس اور روبوٹکس کا جنون ہے اور اس نے کراچی میں واقع مائیکروسوفٹ انوویشن سینٹر میں اپنا ذاتی ڈرون تیار کرلیا ہے۔ بلال کے والد نے ابتدائی عمر سے اسے کوڈنگ سکھائی جس سے اس میں ٹیکنالوجی کا شوق بڑھا۔

اس ننھے انجینیئر کا ڈرون 1500 فٹ کی بلندی تک پہنچ سکتا ہے جو یہ سیکیورٹی اور فوجی مقاصد کے زیرِ استعمال ڈرون جیسا ہے ۔ المونیم سے بنے اس ڈرون پر ایک کیمرہ بھی ہے جو تصاویر اور ویڈیو بناسکتا ہے جب کہ تیز ہوا میں یہ خود کو مستحکم رکھنے کی صلاحیت رکھتا ہے۔ ڈرون ازخود انداز میں لینڈنگ اور ٹیک آف کرنے کے علاوہ جی پی ایس صلاحیتیں رکھتا ہے اور ٹیلی میٹری ڈیٹا بھی جمع کرسکتا ہے۔

جب بلال سے روبوٹ بنانے کے خیال کے بارے میں پوچھا گیا تو اس نے بتایا کہ وہ انسانی صلاحیتوں کو روبوٹوکس کے ساتھ ملاکر اس دنیا کو ایک بہتر جگہ بنانا چاہتے ہیں۔ بلال اسکول اوقات کے بعد باقاعدگی سے مائیکروسوفٹ سینٹر جاتا ہے جہاں اس نے انتھک محنت سے اپنا ڈرون بنایا اور اس عمل سے اس نے رسبری پائی ٹو، وژول اسٹوڈیو اور ونڈوز 10 آئی او ٹی کور پر مہارت حاصل کی۔

تبصرے

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں