اسپتال کی دیواروں سے شہد ٹپکنے لگا

گزشتہ ماہ کارڈف ویلز کے ایک اسپتال میں مریض اور عملہ اس وقت حیران رہ گئے جب انہوں نے اسپتال کی چھت اور دیواروں سے شہد ٹپکتے ہوئے دیکھا۔

اسپتال کی دیواروں سے شہد ٹپکنے پر جب چھان بین کی گئی تو معلوم ہوا کہ اسپتال کی چھت اور دیواروں کے درمیان شہد کی ایک لاکھ سے زائد مکھیوں نے اپنے چھتے بنالیے تھے اور گرمی بڑھنے کی وجہ سے اتفاقاً ان چھتوں کا موم پگھل گیا اور اِن میں موجود شہد ٹپکنے لگا۔

کارڈف کے راک ووڈ اسپتال کے ذمہ داران نے ان اطلاعات پر شہد کی مکھیاں پالنے والے مقامی افراد سے رابطہ کیا جنہوں نے وارڈ کی چھت اور دیواروں میں شہد کی مکھیوں کی ایک بڑی کالونی دریافت کرلی۔

اسپتال حکام کے مطابق یہ شہد چھت کی ٹائلوں سے ٹپک رہا تھا اور وہیں سے ہوتا ہوا دیواروں میں بھی پہنچ رہا تھا جب کہ شہد کے یہ چھتے کم از کم 5 سال سے اس اسپتال کی چھت میں موجود تھے لیکن ان کے بارے میں کسی کو معلوم نہیں ہوسکا۔ ویلز میں غیرمعمولی گرمی کے باعث ان چھتوں کا موم پگھلنے لگا جس کی وجہ سے ان میں موجود شہد بھی اسپتال کی چھت اور دیواروں سے ٹپکنے لگا۔

تبصرے

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں