حضرت علی رضی اللہ عنہ کا قول

حضرت علی رضی اللہ عنہ سے مروی ہے کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے ارشاد فرمایاکہ میری امت پندرہ قسم کی برائیوں کا ارتکاب کرے گی تو امت پربلائیں اورمصیبتیں آپڑیں گی، کسی نے پوچھا یارسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم ! وہ کیا کیا برائیاں ہیں؟ آنحضرت صلی اللہ علیہ وسلم نےفرمایا:

جب مال غنیمت کو شخصی دولت بنالیاجاۓگا

امانت کوغنیمت سمجھ لیاجاۓگا.

زکواۃ کوتاوان سمجھ لیاجاۓگا.

علم دین کو دنیا طلبی کےلیے سیکھاجاۓگا.

مرد اپنی بیوی کی اطاعت کرنےلگےگا.

اورآدمی اپنے دوست کےساتھ نیک سلوک کرے گا اوراپنے باپ کے ساتھ سختی اور بداخلاقی سےپیش آۓ گا. اورمسجد میں شوروغل ہونےلگےگا.

جب قبیلہ کاسردار ان کا بدترین شخص بن جاۓگا.

آدمی کا اعزازواکرام اس کےشرسے بچنے کےلیے کیاجاۓگا.

اورقوم کاسربراہ ذلیل ترین شخص ہوگا.

لوگ کثرت سےشراب پینےلگیں گے.

مرد بھی ریشم کے کپڑے پہننے لگیں گے.

ناچنے گانے والی عورتوں اورگانے بجانے کی چیزوں کو اپنالیاجاۓگا.

اس امت کےپچھلے لوگ اگلوں پر لعنت بھیجیں گے! تواس وقت سرخ آندھی،زلزلہ،زمین کے دھنس جانے،شکل بگڑجانے اور پتھروں کے برسنے کا انتظار کرو اور ان نشانیوں کا انتظار کرو جویکے بعد دیگرے اس طرح آئیں گی جیسے کسی ہار کی لڑی ٹوٹ جانے سے اس کے دانے یکے بعددیگرے بکھرتے چلے جاتے ہیں، بحوالہ ترمذی شریف جلد دوم

تبصرے

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں