آپ ﷺ کے ارشادات

نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم سے ایک دیہاتی نے سوال کیا یارسول اللہ کیا جنت میں انگور ہوں گے؟ حضور اکرم صلی اللہ علیہ نے فرمایا: ہاں. اس دیہاتی نے پوچھا. انگور کا دانہ کتنا بڑا ہوگا؟ حضور اکرم صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا: کیا تیرے باپ نے کبھی اپنی بکریوں میں سے بڑا بکرا ذبح کیا ہے؟ اس نے کہا: جی ہاں !کیا ہے.حضور اکرم صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا: پھر اس نے اس کی کھال اتار کرتیری ماں کو دی ہو اور اس سے کہا ہوکہ اس کھال کا ہمارے لیے ڈول بنادے؟اس دیہاتی نے کہا: جی ہاں. حضور اکرم صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا: انگور کا ایک دانہ اس ڈول کےبرابر ہوگا پھر اس دیہاتی نے کہا:{جب ایک دانہ اتنا بڑا ہوگا} پھر تو ایک دانے سے میرا اور میرے گھروالوں کا پیٹ بھر جاۓ گا حضور اکرم صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا: ہاں! بلکہ تیرے سارے خاندان کا پیٹ بھرجاۓگا. بحوالہ حیاۃ الصحابہ جلد سوئم.

حضرت ابوطلحہ رضی اللہ عنہ فرماتے ہیں کہ ہم لوگ ایک غزوہ میں حضور صلی اللہ علیہ وسلم کے ساتھ تھے. دشمن سے مقابلہ ہوا، میں نے حضور صلی اللہ علیہ وسلم کو یہ دعا کرتے ہوۓ سنا” یا ملك يوم الدين اياك نعبدو اياك نستعين” اۓ روز جزا کے مالک! ہم تیری ہی عبادت کرتے ہیں اور تجھ ہی سے مدد مانگتے ہیں. حضرت ابوطلحہ رضی اللہ عنہ فرماتے ہیں میں نے دیکھا کہ دشمن کے آدمی گرتے چلے جارہے ہیں اورفرشتے انہیں آگے سے پیچھے مار رہے ہیں: بحوالہ حیاۃ الصحابہ جلد سوئم. مندرجہ بالا دعا دشمن پر غالب آنے کی بہترین نبوی دعا ہے.

تبصرے

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں