ضلع اٹک کی سیاسی ڈائری

حکمرا ن جما عت مسلم لیگ (ن)  میں آ پس میں ممبرا ن قومی و صو با ئی اسمبلی اور ضلعی عہد ید دا ران  کے درمیا ن جا ری سرد جنگ کسی وقت بھی لا وہ بن کے پھٹ سکتی ہے اور پھر مسلم لیگ (ن) ضلع اٹک میں یہ جنگ جو تیوں میں دال بٹنے کے متر ادف ہو گی ۔

ضلعی صد ر مسلم لیگ (ن)جا وید خا ن باجو ڑی اور و زیر مملکت شیخ آ فتا ب احمد کے درمیا ن اختلا فا ت کی خبریں زدوعام ہیں،وز یرمملکت کی جا نب سے مختلف سر کا ری    محکمو ں میں ضلعی صد ر مسلم لیگ (ن)جاوید خا ن با جو ڑ ی کے کا م نہ کر نے کی ہد ایت کی بھی اطلا عا ت ہیں جن کی تصد یق و تر دید متعلقہ شخصیات ہی کر سکتی ہے،ضلع بھر میں ضلع کو نسل کی مخصو ص نشستوں پر مسلم لیگ (ن) کی پا لیسی کے بر عکس و زیر مملکت نے ضلع کو نسل کی مخصو ص نشستوں پر ضلعی عہدیداران کے صو ابدیدی اختیا ر ا ت کو اپنے ہا تھ میں لیتے ہو ئے ان سے مشورہ کرنا بھی گوارہ نہیں کیا اور مخصو ص نشستوں پر اپنے چچا زاد بھا ئی کی اہلیہ،چچا زاد بہن کے شو ہر،اپنی منہ بو لی بہن اور اپنی شیخ برادری کے بلد یہ اٹک میں شکست کھا نے والے
امید وار سمیت منظو رنظر افر اد کو نامزد کر دیاان افرادکی اکثر یت کا تعلق مسلم لیگ (ق) سے رہا سا بق آ مر پر ویز مشر ف کے دور میں یہ لو گ مسلم لیگ (ق) کے ہراول دستے میں شا مل تھے اور اب وزیر مملکت کی اقرباپر وری کے سبب مسلم لیگ (ن) میں اعلیٰ عہد وں پر فا ئز ہو نے  کی تیا ریوں میں ہیں،مخصو ص نشستوں کے لیے اقربا پر وری کے زریں اصو لوں کے تحت ضلعی صد ر کے گھر مخصو ص نشستو ں کی لسٹ بھجوا کر  ان سے دستخط کر ا کر ضلعی صد ر کو ربر اسٹمپ بنا دیا گیا،

اسی طر ح بنیادی طو ر پر چکوال سے تعلق رکھنے والے و زیر معدنیات پنجا ب چو ہدر ی شیر علی خا ن مہناس جنہوں نے سیا ست میں قدم رکھنے کے لیے سا بق ضلع نا ظم میجر طاہر صاد ق کی انگلی پکڑ کر مسلم لیگ (ق) کے ٹکٹ پر  پنجا ب اسمبلی کا الیکشن جیتا اور کا میا بی کے بعد بر صغیر پا ک و ہند کے جا گیر داروں کی طر ح اپو زیشن کی بجائے حکو مت میں شمو لیت اختیا ر کرلی اور بعد ازاں 2013 کے عا م انتخا با ت میں مسلم لیگ (ن) کے ٹکٹ پر دوسر ے حلقہ سے پنجا ب اسمبلی کا الیکشن لڑ ا اورپنجا ب اسمبلی میں سب سے زیا دہ ووٹیں لینے کا اعزاز حا صل کیا. ان کے اور رکن پنجا ب اسمبلی شاویز خا ن کے درمیا ن اختلا فا ت اب بہت کھل کر سامنے آ چکے ہیں انہوں نے حسن ابدا ل میں کرامت خان طا ہر خیلی کی جانب سے اپنے اعز از سے دئیے گئے استقبا لیہ سے خطا ب میں تحصیل حسن ابدال اور تحصیل فتح جنگ سے مسلم لیگ (ن) کے ایم پی اے پر کڑ ی تنقید کر تے ہو ئے کہا کہ وہ آ ئندہ حلقہ پی پی 17 تحصیل فتح جنگ اور حسن ابد ال کے معاملات کی خو د نگرانی کر یں گے انہوں نے رکن پنجا ب اسمبلی کے قریبی ساتھیوں کا نا م لیے بغیر مختلف معا ملا ت میں کی جا نے والی کر پشن پر بھی کڑ ی تنقید کی اور کر پشن کو روکنے کا بھی اعلا ن کیا،

وزیر مملکت شیخ آفتا ب احمد کے چچا زاد بھائی شیخ اجمل محمود کی اہلیہ ان کے بہنوئی ڈاکٹر اشرف بٹ، بلدیہ اٹک کے واڈنمبر4سے مسلم لیگ (ن) کے ٹکٹ پر شکست کھا جانے والے شیخ محمود الہی،ضلعی عہدیدارمسلم لیگ (ن) شعبہ خو اتین نسیم بخا ری نے بھی اپنا ووٹ ٹرانسفر کر اکر ضلع اٹک کی مخصوص نشست پر کاغذات نامزدگی جمع کر ائے ہیں کے خلاف ضلع کو نسل اٹک کی مخصوص نشستوں پر الیکشن کمیشن کے عملے کی ملی بھگت سے بلدیہ اٹک اور بلدیہ حضرو سے اپنے ووٹ غیر قانونی طور پر ٹرانسفر کرانے کے خلاف چیئر مین یونین کو نسل سرگ سالار،حمیداوردیگر نے ماڈل پو لیس سٹیشن اٹک سٹی میں جعل سازی کے مقدمہ کے اندراج کی درخواست اوردیگرفورم پردادرسی کے لئے درخواستیں دی ہیں، ضلع کو نسل اٹک کی مخصوص نشستوں کے لئے مسلم لیگ(ن) کے نامزد امیدوار برائے ٹیکنو کریٹ ڈاکٹر اشرف بٹ نے کاغذات جمع کرائے ان کے تجویز کنندہ چیئرمین یونین کو نسل ملک مالا انجینیئر طا رق محمود خان اور تائید کنندہ چیئرمین یونین کو نسل خطیب اختر خان ہیں،دلچسپ امر یہ ہے کہ ڈاکٹر محمد اشرف بٹ کا ووٹ نمبر 529،واڈنمبر 2،محلہ مسلم گنج  بلدیہ حضرو میں درج ہے، جب کہ انہوں نے الیکشن کمیشن کے عملے کی ملی بھگت سے جعلی ووٹ نمبر321نرتو پہ حضرو کا سر ٹیفیکیٹ حاصل کیا جس کا ریکارڈ الیکشن کمیشن میں نہیں ہے اوراسی طرح وزیر مملکت شیخ آفتاب احمد کے چچا زاد بھائی شیخ اجمل محمود جن کی رہا ئش k بلاک واڈ نمبر10 بلدیہ اٹک میں ہے اور ان کی اہلیہ کنیز فاطمہ جو کہ مسلم لیگ (ن) کی طرف سے ضلع اٹک کی مخصوص نشستوں پر امیداوار ہیں ان کے کاغذات نامزدگی پر  چیئرمین یو نین کو نسل ویسہ شوکت زمان خان تجویز کنندہ اور چیئر مین یو نین کونسل شمس آباد محمد سعید اعوان تائید کنندہ ہیں، جب کہ کنیز فاطمہ کا ووٹ نمبر43 واڈ نمبر10 بلدیہ اٹک میں درج ہے

انہوں نے الیکشن کمیشن کے عملے کی ملی بھگت سے ساماں گاؤں یو نین کونسل شمس آباد کا جعلی سرٹیفیکیٹ جس کاریکارڈ الیکشن کمیشن میں نہیں ہے، اپنے کاغذات نامزدگی کے ساتھ لگا یا قانو ن کے مطابق بلدیہ کا ووٹر ضلع کو نسل کی مخصوص نشست پر حصہ نہیں لے سکتا،اس دھوکہ دہی،فراڈ اور جعل سازی سے جعلی ووٹر سر ٹیفیکیٹ اپنے کاغذات نامزدگی کے ساتھ لگانے پر ڈاکٹر محمد اشرف بٹ کے خلاف چیئر مین یو نین کو نسل حمید جمریز خان اور کنیز فاطمہ زوجہ شیخ اجمل محمود کے خلاف چیئر مین یو نین کونسل سرگ سالار سردار وسیم امتیاز خان نے جعل سازی کے مقدمہ کے اندراج کے لئے ایس ایچ او ماڈل پو لیس سٹیشن اٹک سٹی کو الگ الگ درخواستیں دی ہیں جن پر اے ایس آئی محمد عارف نے ای ٹیگ نمبر لگا کر قانو نی کاروائی کاعمل شروع کر دیا ہے جب کہ شیخ محمود الہی کی اہلیہ بلدیہ اٹک سے مخصوص نشست پر مسلم لیگ (ن) کی امید وار اور ان کے بھائی شیخ ظہور الہی بلدیہ اٹک کے کو نسلر ہیں،3 مرحلوں میں مکمل ہونے والے بلدیاتی انتخابات میں پنجاب حکومت جس طرح من مانے نتائج حاصل کرنے کیلئے الیکشن کمیشن کو کٹ پتلی بنا کر آئے روز نت نئے قوانین بنا کر جمہوریت پر عوام کا یقین ختم کرنے کے درپے ہے،اس سے سپریم کورٹ کے حکم پر 10سالوں بعد ہونے والے انتخابات کے سارے مراحل مشکوک ہوتے جا رہے ہیں اگر یہی صورتحال برقرار رہی تو بلدیاتی انتخابات میں عوام نے جس طرح اپنے نمائندوں کو چنا وہ عمل ضائع چلا جائے گا اٹک میں بھی یہی صورتحال برقرار ہے

ضلع کونسل اٹک کی 71میں سے 31نشستیں مسلم لیگ(ن)،ایک پی پی پی،9تحریک انصاف اور 30نشستیں سابق ضلع ناظم میجر طاہر صادق گروپ اور ان کے حمایت یافتہ افراد نے حاصل کیں،آزاد حیثیت میں اتنی بڑی کامیابی مسلم لیگ(ن) کی مرکزی اور صوبائی حکومتوں کو ہضم نہیں ہو رہی ہے،اور ضلع کونسل اٹک میں ہارس ٹریڈنگ زوروں پر ہے جو مسلم لیگ(ن) کی مرکزی اور صوبائی قیادت کیلئے کھلا چیلنج ہے، اٹک کی سیاست میں سابق ضلع ناظم میجر طاہر صادق کے کردار کو کسی صورت نظر انداز نہیں کیا جا سکتا ہے کہ انہوں نے نا مساعد حالات میں بھی اپنا ووٹ بینک برقرار رکھا جو مسلم لیگ(ن) اور پی ٹی آئی کی قیادت کیلئے لمحہ فکریہ ہے 2001ء کے بلدیاتی انتخابات میں ایک ہی پینل سے میجر طاہر صادق اور ملک سہیل کمڑیال مسلم لیگ(ق) کے ٹکٹ پر با لترتیب ضلع ناظم اور نائب ضلع ناظم منتخب ہوئے،ان کا مقابلہ ملک اللہ یار خان آف کھنڈا اور ملک امین اسلم آف شمس آباد کے ساتھ تھا یہ دونوں شخصیات مسلم لیگ(ق) میں میجر طاہر صادق کی چھتری تلے آئیں اور مسلم لیگ(ق) کے ٹکٹ پر 2002ء کے عام انتخابات میں اٹک کے 2حلقوں سےممبران قومی اسمبلی منتخب ہوئے،ملک سہیل کمڑیال،میجر طاہر صادق کو چھوڑ کر مسلم لیگ(ن) میں شامل ہوئے اور2002ء کا قومی اسمبلی کاالیکشن ہار گئے 2008ء کے عام انتخابات میں دوسری مرتبہ ملک سہیل کمڑیال چوہدری پرویز الہٰی کے مقابلے میں قومی اسمبلی کا الیکشن ہار گئے تھے تیسری مرتبہ 2013ء کے عام انتخابات میں ملک سہیل کمڑیال پی ٹی آئی کے ٹکٹ پر مسلم لیگ(ن) کے ملک اعتبار خان آف کھنڈا کے مقابلہ میں الیکشن ہار گئے ہیں،

اس حلقہ سے سابق ضلع ناظم میجر طاہر صادق بھی ان کے مقابلے میں موجود تھے جنہوں نے آزاد حیثیت سے50ہزار سے زائد ووٹ حاصل کیے اس طرح 3مرتبہ میجر طاہر صادق اور ملک سہیل کمڑیال بالواسطہ یا بلا واسطہ آپس میں ایک دوسرے کے سیاسی حریف رہے اسی طرح ملک امین اسلم جو2002ء میں پہلی اور آخری مرتبہ رکن قومی اسمبلی منتخب ہوئے اس کے بعد سے2عام انتخابات میں وہ میجر طاہر صادق کی مخالفت کے سبب شکست سے دوچار ہوئے ہیں ملک امین اسلم اس وقت تحریک انصاف میں اہم مرکزی عہدے پر فائز ہیں ملک امین اسلم اور ملک سہیل کمڑیال کی میجر طاہر صادق سے ذاتی رنجش نے ضلع اٹک کی71یونین کونسلوں اور6میونسپل کمیٹیوں میں مسلم لیگ(ن) کو بے پناہ فوائد دیئے ورنہ تحریک انصاف اور میجر گروپ ایک پلیٹ فارم پر بلدیاتی انتخابات میں حصہ لیتے تو نہ صرف ضلع کونسل بلکہ71یونین کونسلوں میں سے 65یونین کونسلوں پرتحریک انصاف اور میجر گروپ کے امیدواران کامیاب ہوتے اور اٹک کی6میونسپل کمیٹیوں میں سے تمام پر تحریک انصاف اور میجر گروپ کے منتخب کونسلران اپنا چیئرمین اور وائش چیئرمین کے علاوہ مخصوص نشستیں بھی حاصل کرتے،اب بلدیہ اٹک اور بلدیہ پنڈی گھیب میں مسلم لیگ(ن) جبکہ بلدیہ حضرو میں مسلم لیگ(ن) میں دال جوتیوں میں بنٹنے کے سبب مسلم لیگ(ن) کا باغی گروپ فارورڈ بلاک نمایاں نظر آرہا ہے،بلدیہ حسن ابدال میں میجر طاہر گروپ اکیلا،بلدیہ فتح جنگ اور بلدیہ جنڈ میں میجر گروپ تحریک انصاف کی مدد سے چیئرمین اور وائس چیئرمین بنائے گا،ضلع کونسل اٹک میں میجر گروپ اور تحریک انصاف واضح اکثریت میں ہونے کے باوجود صرف ملک سہیل کمڑیال کی ذاتی ضد کے سبب ناکامی سے دوچار ہو سکتا ہے

ملک سہیل کمڑیال مسلم لیگ(ن) چھوڑ کر تحریک انصاف میں شامل ہوئے تھے اب ان کے دوبارہ رابطے مسلم لیگ(ن) کے ساتھ تسلسل کے ساتھ جاری ہیں- مسلم لیگ(ن) کو ضلع کونسل اٹک میں کامیابی دلانے کیلئے وہ نہ صرف آئے روز اخبارات میں مسلم لیگ(ن) کی حمایت میں بیانات دے رہے ہیں بلکہ وہ وزیر مملکت شیخ آفتاب احمد اور دیگر مسلم لیگ(ن) کے مرکزی رہنماؤں سے نصف درج سے زائد ملاقاتیں کر چکے ہیں اور انہیں اس بات کی یقین دہانی کرائی کہ ضلع کونسل میں تحریک انصاف کے9چیئرمین یونین کونسل مسلم لیگ(ن) کو سپورٹ کریں گے تا ہم ایک یا دو چیئرمین یونین کونسل کے سوا ان کی کسی نے بات نہیں مانی ہے اور وہ سیاسی لحاظ سے اپنی ہی جماعت کی مخالفت کے سبب تنہا ہو گئے ہیں اور یہ تنہائی انہیں جلد ہی پارٹی چھوڑنے پر مجبور کر دے گی،

ضلع کونسل اٹک میں بلدیاتی الیکشن کے دوسرے مرحلے میں 28 مخصوص نشستوں کیلئے 68امیدوار میدان میں آ گئے جن میں خواتین کی 15 نشستوں پر 27، ٹیکنوکریٹ کی 4 نشستو ں پر 11، یوتھ کی ایک نشست پر 6، کسان کی 4 نشستوں پر 16 اور نان مسلم کی 4 نشستوں پر 8 امیدوار ہیں، خواتین کی مخصوص نشستوں پر چوہدری شجاعت حسین، چوہدری پرویز الہٰی کی بھانجی، سابق ضلع ناظم میجر طاہر صادق کی صاحبزادی، آزاد رکن قومی اسمبلی محمد زین الہٰی کی ہمشیرہ، سابق رکن قومی اسمبلی ایمان وسیم نمایاں ہیں

دیگر خواتین میں ملہووالی پنڈی گھیب کی نورجہاں، گلیال کھورا پنڈی گھیب کی آمنہ بتول، امین آباد کسراں کی توصیفہ گلناز، کمڑیال پنڈی گھیب کی الیاس بیگم، عباس نگر توت پنڈی گھیب کی شازیہ نورین، میانوالہ پنڈی گھیب کی نورجہاں زوجہ محمد اکرم، ڈھوک دریا پنڈی گھیب کی فریدہ بی بی، بروالہ تحصیل جنڈ کی ریشم جان، ٹانڈہ حسن ابدال کی صبیحہ نازلی، جبی کسراں فتح جنگ کی کنیزہ بی بی، میلاد نگر باہتر فتح جنگ کی نزہت سلطان، خان خیل شینکہ حضرو کی فوزیہ، کالی ڈلی جنڈ کی خاتون بی بی، مٹھیال تحصیل جنڈ کی نذیر بی بی، محلہ محمد نگر اٹک کی نسیم بخاری، محلہ مہرپورہ شرقی حضرو کی کنیز فاطمہ، بہادر خان حضرو کی شاہین بی بی، غورغشتی حضرو کی ماریہ، بسال تحصیل جنڈ کی گلشن آرا،چکی تحصیل پنڈی گھیب کی جنت خاتون، انجرأ افغاناں جنڈ کی رفعت شاہین، چاساں والی ڈھیری فتح جنگ کی نائلہ کنول، چھب تحصیل جنڈ کی سعدیہ خٹک، اورنگ آباد جنڈ کی سائرہ بتول، چھب تحصیل جنڈ کی فرزانہ جبیں، گاڑ حسن ابدال کی فرحت شاہین، کسان نشست پر میکی ڈھوک تحصیل فتح جنگ کے عرفان الحق، ٹھٹی کلراں پنڈی گھیب کے ممریز خان، بھلڑ جوگی حسن ابدال کے نعمان شوکت، سدریال فتح جنگ کے انصر محمود سدریال، موڑا تحصیل فتح جنگ کے ربنواز، شیں باغ تحصیل اٹک کے ملک حمید اکبر خان، ہمک تحصیل فتح جنگ کے ملک خالد محمود، سیدن تحصیل حضرو کے شیخ محمود الہٰی (سابق نائب تحصیل ناظم اٹک)، چیچیاں تحصیل حضرو کے ملک انصار احمد، میرا شریف پنڈی گھیب کے عبدالخالق، موسیٰ شیرانی حضرو کے محمد جمیل، ہمک فتح جنگ کے وسیم اختر، کھوڑ پنڈی گھیب کے سجاد حسین، لنگر تحصیل جنڈ کے آزاد خان، ڈھوک بلراجھنگ تحصیل فتح جنگ کے سید حمید شاہ، محلہ کاملپور سیداں اٹک کینٹ کے تیمور اسلم، نان مسلم کی نشستوں پر کھوڑ پنڈی گھیب کے روبن جان، کھوڑ تحصیل پنڈی گھیب کے یوسف ویلیم، باہتر تحصیل فتح جنگ کے ظفران چاند، حقیقت رائے، کنول نائن، کھوڑ پنڈی گھیب کے چنگیز دلاور، محلہ حاجی بازار جنڈ کی عذرا مریم اور بلدیہ کالونی عیدگاہ حضرو شہر کے گلزار مسیح، ٹیکنو کریٹ کی نشستوں پر گلزار آباد پنڈی گھیب کے سردار غلام عابد، میانوالہ تحصیل پنڈی گھیب کے محمد اسلم، سگھری تحصیل جنڈ کے محمد اسحا ق، گاؤں امیر خان تحصیل فتح جنگ کے سردار حبیب انور خان، دریا شریف حضرو کے ملک اسرار احمد، چھپری راول تحصیل جنڈ کے سجاد احمد خان، جلوال تحصیل جنڈ کے سفیر احمد، محلہ محمود آباد حسن ابدال کے محمد سجاد حیدر، ڈھوک عنایت پنڈی گھیب کے محمد اکرم اعوان ایڈووکیٹس، نرٹوپہ حضرو کے ڈاکٹر محمد اشرف بٹ، باہتر کے ریٹائرڈ میجر سردار عتیق احمد خان، یوتھ کی نشست کیلئے قطبال فتح جنگ کے وسیم اکبر خان، باہتر فتح جنگ کے ذیشان ملک، نرٹوپہ حضرو کے معین خان، مکھڈ روڈ کانی جنڈ کے توقیر احمد، ڈھوک کھجوری جابہ تحصیل جنڈ کے محمد ریاض، محلہ سید خیل نرٹوپہ تحصیل حضرو کے محمد عامر خان شامل ہیں،بلدیہ اٹک میں بلدیاتی الیکشن کے دوسرے مرحلے میں 7 نشستوں پر 17 امیدواروں کے درمیان مقابلہ ہے جن میں خواتین کی 4 نشستوں پر 7، ورکر کسان ورکر کی ایک نشست پر 3، یوتھ کی ایک نشست پر 5 اور نان مسلم کی ایک نشست پر 2 امیدوار موجود ہیں جن میں سے خواتین کی مخصوص 4 نشستوں کیلئے پیپلز کالونی کی امینہ نشاط جعفری بیوہ سید افتخار حسین جعفری (مرحوم) دارالسلام کالونی گلی نمبر 8 کی شیریں اسلم مسیح دختر اسلم پرویز مسیح، محمود آباد کی خالدہ پروین زوجہ قدیر احمد، محلہ مہرپورہ شرقی کی شازیہ بی بی زوجہ شیخ محمود الہٰی(سابق نائب تحصیل ناظم اٹک)، مدنی روڈ آر بلاک کی خالدہ مسرت جبیں آرأ بیگم بیوہ رانا محمد صادق ادیب، ان کی بیٹی درشہوار رانا، محلہ مسجد ایوبیہ چھوئی ایسٹ کی نادیہ یاسر زوجہ یاسر نثار، یوتھ میں محلہ مسجد اللہ رکھا اعوان شریف کے محمد صدام حسین ولد غلام خان اعوان، مدنی روڈ محلہ شہر اٹک کے منصور افضل ولد کونسلر بلدیہ اٹک شیخ محمد عارف، فاروق اعظم کالونی کے وقاص علی محمود، ولد شیخ حامد محمود، آر بلاک کے مبین احمد صدیقی ولد صغیر احمد صدیقی، محلہ ستار  آباد ڈھوک فتح کے کامران خان ولد پرویز خان، کارکن کی ایک نشست کیلئے گل آباد ڈھوک فتح کے نوید سلطان خٹک ولد رسول محمد خٹک، چھوئی ایسٹ کے یاسرا حتشام ملک ولد مسلم، ریلوے کالونی محلہ شیڈ کے قمر فاروق کندی ولد نذر حیات کندی، نان مسلم کی ایک نشست کیلئے کمیٹی لائن چھوئی روڈ جی بلاک کے مسلم لیگ (ن) سے تعلق رکھنے والے طارق ویلیم سونترا ولد ویلیم مسیح، محلہ ستار آباد ڈھوک فتح کے مسلم لیگ (ق) سے تعلق رکھنے والے شوکت اقبال مسیح ولد کستوری مسیح شامل ہیں۔

تبصرے

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں