معاشرے میں میڈیا کا کردار

معاشرے میں میڈیا کا کردار
ریاست کا چوتھا ستون میڈیا،جہاں معاشرے کے سنوار میں اپنا کردار ادا کر رہا ہے،وہیں کسی حد تک معاشرے میں بگاڑ پیدا کر رہا ہے۔ فی زمانہ ملک کے بیشتر ٹی وی چینلز،ڈراموں اور اشتہارات کے ذریعے اس قدر فحاشی اور بے حیایٔ پیدا کر رہے ہیں کے اہل خانہ کے ساتھ بیٹھ کر ٹی وی دیکھنا محال ہے۔ بعغ اوقات اچانک ایسی خبرناک خبر آتی ہے کہ سر شرم سے جھک جاتا ہے۔

باقی ما ندہ کسر اشتہارات نکال دیتے ہیں۔ اشتہارات میں موغوعات کم اور ماڈلز کی نما یٔش زیادہ ہوتی ہے۔ جب کہ کیبل پر چلنے والے دیگر چینلز کے پاس کیونکہ معیاری پروگرامز نہیں ہوتے تو وہ اخلاق ساز بھارتی پروگرامز نشر کرتے ہیں،جنہیں ہمای خواتین اپنے کام زیر التوا رکھ کر بڑی دلچسبی سے دیکھتی ہیں۔ نتیجتا گھر گر ہستی اور بچوں کی تربیت مفقود ہو جاتی ہے۔

دوسری طرف قوم کے بچے اپنے قومی ہیروز کے ناموں سے ناواقف ہوتے جا رہے ہیں۔ لیکن بھاتی فلموں کے ہیروز کے نام اور ان کے اخلاق باختہ ڈایٔلاگز انہں بخوبی ازبر ہیں۔ حال ہی میں ایک شادی میں جانے کا اتفاق ہوا جب وہاں کھانے لگے تو ایک بچے نے اپنے والد سے پوچھاابو کھانا لگ رہا ہے مگر یہاں شادی تو ہویٔ ہی نہیں۔ والد نے کہا بیٹا شادی تو ہو گیٔ ہے۔ جس پر بیٹے نے کہا ابھی پھیرے تو ہوۓ ہی نہیں۔ اس بات سے بخوبی اندازہ لگایا جا سکتا ہے کہ بھارتی میڈیا ہماری تہزیب و ثقافت کو کس طرح بگاڑ رہا ہے۔

پہلے مایٔں بچوں کو سبق آموز کہانیاں سنایا کرتی تھیں جن کا بچوں پر اثر بھی بہت ہوتا ہے۔ وہ وہی کہانیاں اپنے دوستوں کو سناتے تھے۔ جب کہ آج کل اکثر پاکستانی ٹی وی چینلز پر جرایٔم پر مبنی پروگرامز اور ڈراموں میں جرایٔم کرنے کے ایسے ایسے گر بتایٔے جا رہے ہیں کہ جس سے معاشرے میں بجاۓ عبرت کہ روز بہ روز کرایٔم میں اذافع ہوتا چلا جا رہا ہے۔ لہذا ضرورت اس امر کی ہے کہ میڈیا اس جانب خصوصی توجہ دے اور اخلاقیات پر مبنی پروگرامز دکھاۓ جس سے معاشرہ بہتری کی طرف گامزن ہو کی آج اپنی سمت درست کر لیں گے تو تب کل اپنی بچوں کو ایک صحت مند پاک صاف معاشرہ دے پایٔں گے۔

تبصرے

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں