نیند کی کمی موٹاپے کی بڑی وجہ

کیا آپ جسمانی وزن میں اضافے سے پریشان ہیں تو ہوسکتا ہے کہ اسکی وجہ خوراک نہیں بلکہ نیند کی کمی ہو۔

یہ بات ایک نئی طبی تحقیق میں سامنے آئی ہے۔

امریکن اکیڈمی آف سلیپ میڈیسین اور دی سلیپ ریسرچ سوسائٹی کی مشترکہ تحقیق کے مطابق جو بالغ افراد چھ گھنٹے سے بھی کم سوتے ہیں ان کے موٹے ہونے کا امکان بہت زیادہ ہوتا ہے۔

تحقیق میں بتایاگیا ہے کہ نیندکی کمی آپ کی جسمانی خوبصورتی، مزاج، صحت غرض ہر چیز پر منفی اثرات مرتب کرتی ہے۔

تاہم محققین کا کہنا ہے کہ نیند کی کمی سے جسم و ذہن پر طاری ہونے والی تھکاوٹ جسمانی وزن میں اضافے اور بیماریوں کے خلاف جسم میں سرگرم مدافعتی نظام کوکمزور کرنے کا باعث بن سکتی ہے۔

ان کاکہنا تھا کہ چھ گھنٹے سے کم نیند چہرے پر جھریوں کا باعث بنتی ہے اورآنکھوں کے گرد حلقے بھی بدنمائی میں اضافہ کردیتے ہیں مگر زیادہوقت تک جاگنے کے نتیجے میں جسمانی میٹابولزم کی رفتار سست ہوتی ہے اور کھانا ہضم نہیں ہوپاتا جبکہ آپ مزید کیلیوریز مسلسل جسم کا حصہ بنارہے ہوتے ہیں جس کے نتیجے میں موٹاپا خودکار طور پر آپ کو شکار کرلیتا ہے۔

خیال رہے کہ اس سے پہلے یورپین سوسائٹی آف کارڈیالوجی کی ایک تحقیق میں یہ بات سامنے آئی تھی کہ نیند کی کمی سے مردوں میں دل کے دورے یا فالج کا خطرہ بڑھ جاتا ہے جسکی وجہ بلڈپریشر میں اضافہ ہوتا ہے۔

تبصرے

comments