متوقع چیئرمین میونسپل کمیٹی فتح‌جنگ و شہر کی سیاسی صورتحال

(صداقت محمود مٹھو سے )

میونسپل کمیٹی فتح جنگ کی چیئرمینی میجر گروپ اور (ن) لیگ آمنے سامنے نشستیں کم ہونے کی وجہ سے حکمران جماعت کو پیپلز پارٹی اور پی ٹی آئی کا سہارا لینا پڑ رہا ہے -میونپسل کمیٹی کے نصف سے زائد کونسلر چیئرمین بننے کا خواب دیکھ رہے ہیں- پی ٹی آئی 2کونسلر ففٹی ففٹی قاضی شاہد محمود کی جانب سے(ن) لیگ کے حمایت یافتہ امیدوار برائے چیئرمین ہونے کا دعویٰ جبکہ دوسرے کونسلر زبیر خان نے میجر گروپ کی حمایت کا اعلان کر دیا –
میجر گروپ کا ایک کونسلر اپنے ساتھ ملا کر پیپلز پارٹی کے ریاض خان بالڑہ ایک بار پھر فتح جنگ کی چیئرمینی کیلئے”بادشاہ گر“ کا کردار ادا کرنے کیلئے متحرک ہو گئے –
ذرائع کے مطابق (ن) لیگ کے آصف علی ملک ایڈووکیٹ بھی ریاض خان بالڑہ پر انحصار کر رہے ہیں تاہم چیئرمینی سے قبل مخصوص نشستوں کے انتخابات دونوں پارٹیوں کیلئے کڑا امتحان بن گیا –
موجودہ صورتحال میں مخصوص نشستوں پر کامیابی حاصل کرنے والا دھڑا ہی ایم سی کا چیئرمین بنانے کی پوزیشن میں ہو گاووٹ برابر ہونے کا بھی امکان ہے-
بلدیاتی انتخابات کے نتائج کے مطابق ابتدا میں پارٹی پوزیشن اس طرح تھی کہ 12میں سے 6کونسلرحاجی محمد رفیع چھاچھی،بلال عباس،محمد شفیق،عابد عزیز ایڈووکیٹ،حاجی ضیاء الدین اور ملک عابد داؤد میجر گروپ(ق) لیگ کے ممبران تھے جبکہ (ن) لیگ کو صرف 3نشستوں پر کامیابی حاصل ہوئی ملک بشیر حیات،چودھری علی ایوب،ملک آصف بشیر (ن) لیگ کے ٹکٹ پر کامیاب ہوئے-
آزاد کونسلر محمد سفیر ملک نے بعد ازاں (ن) لیگ کی حمایت کی تو انکی تعداد 4ہو گئی پی ٹی آئی کے قاضی شاہد محمود کا جھکاؤ بھی مسلم لیگ(ن) کی طرف ہو گیاجبکہ زبیر خان میجر طاہر صادق گروپ کی حمایت میں سامنے آگئے مسلم لیگ(ن) کی طرف سے آصف علی ملک ایڈووکیٹ نے بھر پورجوڑ توڑ کی کوشش کی-
پی ٹی آئی اور آزاد کونسلر کو ساتھ ملا کرتعداد 5ہو گئی مدمقابل کیمپ میجر گروپ میں 7کونسلر (ن) لیگ کی چیئرمینی کیلئے خطرہ بن گئے تو حکمران جماعت نے پیپلز پارٹی کے ریاض خان بالڑہ کو چیئرمین بنانے کا ٹاسک دے دیا ریاض خان بالڑہ نے اپنے حمایت یافتہ ایم سی کے کونسلر ملک عابد داؤد کو اپنے ساتھ ملا کر سیاست کو پلٹنے کی کوشش کی ملک عابد داؤد مسلم لیگ (ن) کے امیدوار کے مقابلہ میں فتح جنگ میں سب سے زیادہ لیڈ پر کامیابی حاصل کی ایک کاروباری شخصیت کے علاوہ عابد داؤد کا کوئی سیاسی تعارف نہ تھا- سجادہ نشین دربار پیر احمد شاہ فتح جنگ پیر سید قاسم شاہ کے علاوہ سابق تحصیل ناظم سردار افتخار احمد خان،عابد عزیز ایڈووکیٹ اور بالڑہ گروپ نے ملک عابد داؤد کی انتخابی مہم اس انداز سے چلائی کہ وہ سب سے پہلے نمبر پر آگئے- انتخابی نشان بالٹی پر الیکشن جیتنے کے بعد (ق) لیگ کے ساتھ وابستگی ریٹرننگ آفیسر کے سامنے جمع کرا دی- قیاس آرائی کی جارہی ہے کہ بالڑہ گروپ کا ملک عابد داؤد چیئرمین ایم سی کا امیدوار ہو سکتے ہیں-
مخصوص نشستوں کے انتخابات میں کامیابی کیلئے میجر گروپ کے قائد طاہر صادق،سابق تحصیل ناظم سردار افتخار احمد خان،ملک نصرت ماجھیا اور دیگر جوڑ تور کے زریعے کامیابی کیلئے سر دھڑ کی بازی لگا رہے ہیں –
(ن) لیگ کے آصف علی ملک ایڈووکیٹ اور انکے اتحادی پی پی پی کے ریاض خان بالڑہ اور سردار سلیم حیدر خان بھی فتح جنگ کی چیئرمینی کیلئے اپنا بھر پور کردار ادا کر رہے ہیں –
میجر گروپ نے فتح جنگ شہر میں حکومتی جماعت کو ٹف ٹائم دینے کیلئے لائحہ عمل طے کر دیا- تاہم گذشتہ روز میجر طاہر صادق اور پی ٹی آئی کے چیئر مین عمران خان کے درمیان ہونے والی ملاقات میں پی ٹی آئی نے واضع طور پر میجر طاہر صادق کی حمایت کا اعلان کر دیا جس کی وجہ سے ضلع بھر میں میجر طاہر صادق کی پوزیشن مستحکم ہوگئی ہے خفیہ رائے دہی سے فائدہاٹھانے کیلئے دونوں دھڑے اراکین سے خفیہ ملاقاتوں میں مصروف ہیں تاہم نتیجہ 17نومبر کو سامنے آئے گا۔

تبصرے

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں