پنڈی گھیب: وزیر مملکت پانی و بجلی عابد شیر علی کا واپڈا آفس پنڈی گھیب کا دورہ

پنڈی گھیب: وفاقی وزیر مملکت پانی و بجلی  عابد شیر علی نے گذشتہ روز تقریبا بارہ بجے اچانک پنڈی

گھیب واپڈا آفس کا دورہ کیا  اور ایس ڈی او کے کمرے میں بیٹھ کر شکایات رجسٹر کو چیک کرنا شروع کیا

اور پھر درج رابطہ نمبرز پر شکایت کنندہ سے مسٗلہ دور ہونے یا نہ ہونے کے بارے میں دریافت کیا۔

وزیر مملکت کی موجودگی کے دوران واپڈا آفس میں ہی موجود سایٗلین نے واپڈا آفس پنڈی گھیب کے اہلکاروں

کے خلاف شکایات کے انبار لگا دیے۔ اور وزیر مملکت کو آگاہ کیا کہ  ہر ایک گھنٹے کے بعد دو سے تین

گھنٹے کی  فورس لوڈشیڈنگ معمول بن چکی ہے۔

اور جب واپڈا اہلکاروں کا دل چاہے بجلی منقطع کردیجاتی ہے۔ جس پر وفاقی وزیر نے برپمی کا اظہار کیا۔

 وفاقی وزیر کی واپڈا آفس موجودگی کا پتہ چلنے پر  سینکڑوں کی تعداد میں سایٗلین، مقامی عوامی نمایٗندے

اور صحٓفی موقع پر پہنچ گےٗ جنہوں نے وفاقی وزیر کو ٹرانسفارمر کی تنصیب و خرابی دور کرنے، میٹر

نصب کرنے اور بجلی کنکشن دیے جانے کے عوض رشوت طلب کرنے کے بارے میں آگاہ کیا۔

وفاقی وزیر نے موقع پر واپڈا اہلکاروں کی سرزنش کی اور آنٗندہ پندرہ دن بعد کھلی کچہری لگانے کا عندیہ

دیا

تبصرے

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں