فتح جنگ اور گردونواح میں جسم فروشی کادھندہ عروج پر

فتح جنگ(تحصیل رپورٹر)

فتح جنگ اور گردونواح میں جسم فروشی کادھندہ عروج پر پہنچ گے سٹی چوکی فتح جنگ کی خاموشی معنی خیز

تفصیلات کے مطابق فتح جنگ شہر محلہ چاساں والی ڈھیری،ڈھوکڑی روڈمیں قائم فحاشی کے اڈے سرے عام دعوت گناہ دے رہے ہیں جسکی وجہ سے نوجوان نسل بے راہ روی کاشکار ہورہی ہے ان اڈوں کی نائیکاوں کے پاس پنڈیگھیب،اٹک، گوجرخان،جہلم، حسن ابدال اورچکوال سے آئے روز نئی نئی تتلیاں روزانہ موجود ہوتی ہیں جوکہ فتح جنگ کے علاوہ اسلام آباد،راوالپنڈی اور دیگر شہروں کو سپلائی کی جاتی ہیں اس دھندے کو چار چاندلگانے میں رکشہ ڈرائیورخصوصاًغیرمقامی ڈرائیورخاص کردار ادا کرنے لگے

گاہکوں کوفحاشی کے اڈوں پرپہنچانااور تتلیوں کو شہر میں گھمانااور ان کو متعلقہ جگہوں پر چھوڑکرآنے میں ان کا اہم کردار ہے شہر میں قائم ان اڈوں کی وجہ سے کئی شریف لوگوں نے اپنے ذاتی مکانات چھوڑکردوسرے محلوں مکان کرایہ پر لے لئے کیونکہ ان قحبہ خانوں کی وجہ سے کئی لڑکیاں انکے دام میں پھنس کرگھروں سے فرار ہوچکی ہیں جنہیں ان اڈوں میں آنے والے اوباشوں نے شادی کے سبز باغ دکھا کربھاگ جانے کا مشورہ دیابعد ازاں دوسرے شہروں میں کوٹھوں کی زینت بنا دیا

رہی سہی کسرشہر میں گھومنے والی دوشیزاوں نے پوری کر رکھی ہے جوکہ بھیک مانگنے کے روپ میں سرعام دعوت گناہ دینے لگیں شہر کے مختلف چوراہوں میں ٹولیوں کی صورت میں سربازارمردوں کے ساتھ بے ہودہ مزاق چھیڑچھاڑکرنااورایک دوسرے سے بڑھ کرنمایاں کرنا ان کیلئے عام سی بات ہے عوامی حلقوں نے آرپی او راولپنڈی سے مطالبہ کیا ہے کہ سٹی چوکی فتح جنگ میں صفدرخان جیسے کسی ایماندارآفیسر کو تعینات کیا جائے جس نے اس سے پہلے ان فحاشی کے اڈوں پرچھاپہ مارکر کئی بھنورے اور تتلیوں کو رنگے ہاتھوں پکڑکرانکے خلاف ایف آئی آر درج کی تھی جس کی وجہ سے کئچھ عرصہ یہ برائی کے اڈے بند ہوگئے تھے لیکن اب موجودہ چوکی انچارج کو بھتہ جاتا ہے یاکوئی اوروجہ جسکی وجہ دن ہو یا رات پیسہ ڈال بہہ جا نال کے مترادف بلا خوف وخطراپنا کام کر کے واپس لوٹ جائیں کیونکہ پولیس کی آنکھیں بند کرنے سے اس دھندے کو چار چاند لگے ہوئے ہیں

تبصرے

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں