ڈونلڈ ٹرمپ امریکہ کے 45ویں صدر منتخب ہو گئے

خبررساں ادارے اے پی کے مطابق ڈونلڈ ٹرمپ ہلیری کلنٹن کو شکست دے کر امریکہ کے 45 ویں صدر منتخب ہو گئے ہیں۔

انھوں نے یہ فتح کئی کلیدی ریاستوں میں یک بعد دیگرے کامیابی کے بعد حاصل کی، حالانکہ گذشتہ کئی ماہ سے رائے عامہ کے جائزوں میں کلنٹن کو ان پر برتری حاصل تھی۔

فلوریڈا، اوہائیو اور شمالی کیرولائنا جیسی اہم سوئنگ سٹیٹس میں ٹرمپ کی کامیابی نے ان کی فتح کا راستہ ہموار کیا۔

عالمی مارکیٹوں میں اتھل پتھل جاری ہے اور ڈاؤ میں 800 پوائنٹس کی کمی واقع ہو گئی ہے۔
ہلیری کلنٹن کی انتخابی مہم کے سربراہ جان پوڈیسٹا نے کہا ہے کہ ہلیری آج شب خطاب نہیں کریں گی اور ان کے پاس آج کہنے کو کچھ نہیں ہے۔ ووٹوں کی گنتی جاری ہے اور ہر ووٹ اہم ہے۔ کئی ریاستوں میں سخت ترین مقابلہ ہے اس لیے ابھی میرے پاس کہنے کو کچھ نہیں۔ میں اس ہال اور ملک بھر میں موجود ہر شخص کو بتانا چاہتا ہوں کہ آپ کی آواز اور جوش و جذبہ ان (ہلیری) اور ہم سب کے لیے بہت معنی رکھتا ہے۔ ہمیں آپ پر فخر ہے اور ہمیں ہلیری پر بھی فخر ہے۔ انھوں نے شاندار کام کیا اور وہ ابھی رکی نہیں ہیں۔ آپ کا شکریہ کہ آپ ان کے ساتھ رہے ہیں اور وہ ہمیشہ آپ کے ساتھ رہیں گی
بی بی سی کی کیٹی کے کہتی ہیں کہ ’جہاں تک مجھے یاد پڑتا ہے یہ سیاست میں سب سے بڑا اپ سیٹ ہے۔‘

ڈونلڈ ٹرمپ وہ امیدوار ہیں جن کا کوئی سیاسی پس منظر نہیں تھا، جنھوں نے ’قواعد و ضوابط کی خلاف ورزی کی، جنھوں نے رائے عامہ کے جائزوں اور تمام پیشن گوئیوں کو غلط ثابت کر دیا۔

تبصرے

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں