فتح‌جنگ: ناجائز تجاوزات و غیر قانونی ٹرانسپورٹ اڈوں سے ٹریفک مشکلات، پیدل چلنا دشوار

فتح جنگ(صداقت محمودمٹھوسے)
حکومت پنجاب اور ڈی سی او اٹک کے سخت احکامات کو ہوا میں اڑاتے ہوئے فتح جنگ انتظامی افسران لمبی تان کر سو گئے ڈی سی او اٹک کے دفتر سے تجاوزات،غیر قانونی اڈوں اور ملاوٹ مافیا کے خلاف آپریشن کے احکامات ردی کی ٹوکری میں ڈالنے سے شہر میں جنگل کا قانون رائج ہو گیا ہے شہر میں تجاوزات کی بھرمار غیر قانونی ٹرانسپورٹ اڈے،فوڈ اتھارٹی ملاوٹ مافیا کے ساتھ مل گئی
ٹی ایم اے کے ایڈمنسٹرٹر کی آشیر باد پر بڑے کاروباری مراکز نے ناجائز تجاوزات کے زریعے بین الصوبائی شاہرات پر قبضہ جما لیادن میں کئی کئی بار ایڈمنسٹریٹر کی گاڑی گذرنے کے باوجود بین الصوبائی شاہراہ پر 15سے 20فٹ ناجائز تجاوز افسران کی نظروں سے اوجھل شہریوں کیلئے سوالیہ نشان بن گیا دکھاوے کی کاروائی کیلئے غریب ریڑھی بانوں کی پکڑ دھکڑ سے ٹوٹل پورا کیا جاتا ہے
پریس کلب کے باہر بین الصوبائی چوک میں ایک کاروباری مرکز کے باہر پختہ تجاوز کسی افسر کو نظر نہ آنا ملی بھگت کا واضح ثبوت ہے شہر کی فٹ پاتھوں کے ساتھ ساتھ شاہرات کا بیشتر حصہ بھی تجاوزات مافیا کے قبضہ میں آگیا ہے رہی سہی کسر غیرقانونی اڈوں نے نکال کی ہے تجاوزات اور غیر قانونی ٹرانسپورٹ اڈوں کے باعث گھنٹوں ٹریفک جام رہنا معمول بن گیا ہے گاڑیوں کا گذرنا تو درکنار پیدل چلنا بھی فتح جنگ کے شہریوں کیلئے محال ہو گیا ہے فوڈ اتھارٹی غیر مؤثر ہوکر رہ گئی ہے انتظامیہ کی طرف سے فرضی کاروائیوں کے باعث ملاوٹ مافیا بے لگام ہو گیا ہے ہوٹل بیکریوں کے علاوہ کریانہ سٹورز پر بھی ناقص اور غیر معیاری اشیائے خوردنی کی فروخت عام ہے ٹی ایم اے کی جانب سے شہر میں سروسز کی فراہمی بھی معطل ہو کر رہ گئی ہے واٹر سپلائی،صفائی اور سٹریٹ لائٹس کے حوالہ سے شکایات کے انبار لگے ہوئے ہیں

تبصرے

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں