پولیس چوکی فتح‌جنگ سٹی نے ملزم کے بجاےء مدعی مقدمہ کو گرفتار کرلیا، عدالتی حکم پر رہا کردیا گیا

فتح جنگ(تحصیل رپورٹر)
فتح جنگ سٹی چوکی تھانیدار نے مدعی کو دھر لیا ثبوت کے بغیر شہری کو گرفتار کرنے پر سول جج فتح جنگ راجہ احتشام مقرب کی عدالت کا اظہار برہمی پولیس کو فوری طور پر ملزم رہا کرنا پڑا-
فتح جنگ کوہاٹ روڈ پر ڈھوکڑی بیکری پر جھگڑا ہوا بیکری مالک پر حملہ کرنے والے ملزمان بھاگ گئے – بیکری کے مالک محمد شہزاد اور محمد رمضان سائل بن کر سٹی چوکی پر گئے تو انچارج چوکی ایس آئی محمد افضل نے انہیں ریکارڈ یافتہ قرار دے کر گرفتار کر لیا محمد رمضان تو وہاں سے واپس گھر پہنچ گیا جبکہ محمد شہزاد کو پولیس نے رات بھر حوالات میں بند رکھا
صبح ریمانڈ کیلئے جب جوڈیشل مجسٹریٹ سول جج فتح جنگ کی عدالت میں پیش کیا تو محمد شہزاد کی جانب سے سردار احمد حسن خان ایڈووکیٹ نے بیان دیا کہ پولیس نے سائل کو ملزم بنا کر ناجائز طور پر گرفتار کیا ہے محمد شہزاد اپنی بیکری پر ہونے والے جھگڑے کی بابت چوکی پر گیا تو اسے مدعی کی بجائے دیگر کسی مقدمے میں ملزم بنا کر بٹھا لیا گیا جس پر عدالت نے عدم ثبوت کی بنا پر گرفتاری کو غیر قانونی قرار دے دیا اور پولیس کی طرف سے ریمانڈ کی استدعا بھی رد کر دی جس پر عدالت کے اندر ہی پولیس کومحمد شہزاد کی ہتھکڑی کھولنا پڑی
عدالت نے سخت ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ پولیس نے اپنا رویہ درست نہ کیا تو سائلین تھانہ میں کیسے آئیں سائل عدالت اور تھانے میں انصاف کی توقع لے کر آتا ہے کسی بھی بے گناہ شہری کو ناجائز تنگ نہ کیا جائے ثبوت کے بغیر گرفتاری خلاف قانون ہے۔
متاثرہ فریق نے انصاف فراہم کرنے پرراجہ احتشام مقرب کی عدالت پر اعتماد کا اظہار کرتے ہوئے زبردست خراج تحسین پیش کیا ہے۔

تبصرے

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں