قطر بحران، مزيد گھمبير ہوتا ہوا

سعودی عرب، مصر، متحدہ عرب امارات اور بحرين نے دہشت گردی کے تناظر ميں قطر کے ساتھ مبينہ تعلقات کے شبے پر مزيد نو افراد اور نو ہی کمپنيوں پر پابندياں عائد کر دی ہيں۔
متعلقہ کمپنيوں اور اشخاص کے ناموں کو اس فہرست ميں شامل کر ليا گيا ہے، جس ميں پابندی کے زمرے ميں آنے والوں کے نام درج ہيں۔ اس خبر کی تصديق سعودی عرب کی سرکاری نيوز ايجنسی نے کر دی ہے۔ نئے ناموں ميں ليبيا، يمن اور قطر سے تعلق رکھنے والے افراد و کمپنياں شامل ہيں۔ ايسی اطلاعات بھی ہيں کہ چند متاثرہ افراد نے مبينہ طور پر شام ميں سرگرم النصرہ فرنٹ جيسے جہادی گروہوں کی مالی معاونت کی جبکہ چند ديگر نے القاعدہ کے ساتھ تعاون کيا۔ تاحال اس پيش رفت پر قطر کی طرف سے کوئی رد عمل سامنے نہيں آيا ہے۔

تبصرے

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں