آج نواز شریف کے متبادل کے چناؤ کے لیے اہم اجلاس

عدالتِ عظمیٰ کی جانب سے نواز شریف کی بطور وزیراعظم نا اہلی کے بعد ان کے متبادل کی تلاش کے لیے پاکستان مسلم لیگ نواز کا اہم اجلاس سنیچر کو منعقد ہو رہا ہے۔
بی بی سی کے نامہ نگار آصف فارقی کے مطابق مسلم لیگ کے ذرائع کا کہنا ہے کہ جمعے کو عدالت کا فیصلہ آنے کے بعد نواز شریف کی زیر صدارت مسلم لیگ کے پہلے اجلاس میں بھی فوری اور طویل مدت کے لیے وزیراعظم کے چناؤ جیسا اہم مسئلہ زیر بحث آیا تھا۔
خیال رہے کہ سپریم کورٹ نے وزیراعظم اور ان کے بچوں کے خلاف پاناما کیس کے متفقہ فیصلے میں نہ صرف وزیراعظم کو نا اہل قرار دیا بلکہ نواز شریف سمیت ان کے خاندان کے افراد کے خلاف نیب میں ریفرنس دائر کرنے کا حکم بھی دیا ہے۔
مسلم لیگ نواز کے ذرائع کا کہنا ہے کہ نواز شریف کا موقف تھا کہ انھیں آئندہ انتخابات تک پارٹی کو لے کر جانا ہے اور اس مقصد کے لیے وہ ایسی متبادل قیادت چاہتے ہیں جو پارٹی کو اکٹھا رکھ سکے۔
اس موقع پر انھوں نے اپنے متبادل وزیراعظم کے طور پر اپنے چھوٹے بھائی شہباز شریف کا نام پیش کیا جسے متفقہ طور پر منظور کر لیا گیا لیکن چونکہ شہباز شریف رکن قومی اسمبلی نہیں ہیں اس لیے پہلے اجلاس میں اس نام پر اتفاقِ رائے نہیں ہو سکا کہ شہباز شریف کے قومی اسمبلی کا انتخاب لڑنے تک وزیراعظم کسے بنایا جائے گا۔

تبصرے

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں