چار سال کے طویل انتظار کے بعد شندور فیسٹیول کا آغاز

چترال اور گلگت کی ٹیموں میں تنازع حل ہونے کے بعد گلگت میں 4 سال کے طویل انتظار کے بعد شندور فیسٹیول کا آغاز ہو گیا۔اس کے ساتھ ہی علاقے میں خوشی کی لہر دوڑ گئی۔لوگ اس کے انعقاد پر جشن منا رہے ہیں۔
میڈیا رپورٹس کے مطابق 1936   ے کھیلے جا رہے  اس ایونٹ کیلئے ایف سی نے سیکیورٹی کا بیڑا اٹھایا ہے۔اس کے علاوہ گلگت بلتستان اور خیبر پی کے کی حکومتیں اس ایونٹ کیلئے ایف سی کی معاونت کر رہی ہیں۔

واضح رہے کہ چترال اور گلگت کی ٹیموں کے درمیان دنیا کے بلند ترین مقام پر پولو میچ کھیلنے کی روایت چلی آرہی ہے جب کہ گزشتہ 4 سال سے دونوں ٹیموں کے ہاں تنازع کے باعث میچ نہیں ہورہا تھا ۔اس فیسٹیول میں غیر ملکیوں سمیت ہزاروں مقامی افراد شرکت کرتے ہیں جس سے پاکستان کو بڑی تعداد میں زرمبادلہ حاصل ہوتا ہے۔

تبصرے

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں