پاکستان وائٹ واش سے بچ گیا، چار وکٹوں سے فتح

انچ ایک روزہ کرکٹ میچوں کی سیریز کے کارڈف میں کھیلے جانے والے آخری میچ میں پاکستان نے انگلینڈ کو چار وکٹوں سے ہرا دیا۔

پاکستان کو اس سے پہلے سیریز کے پہلے چاروں میچوں میں شکست کا سامنا کرنا پڑا تھا۔

سرفراز اور شعیب ملک کے عمدہ اننگز کھیل کر آؤٹ ہونے کے بعد رضوان اور عماد نے ذمہ داری سے کھیلتے ٹیم کو فتح دلائی۔

اس سے پہلے سرفراز احمد عمدہ اننگز کھیل کر 90 رنز پر چھکا لگانے کی کوشش میں کیچ آؤٹ ہو گئے۔ اس کے فوری بعد شعیب ملک 77 رنز پر کیچ آؤٹ جبکہ نواز دو رنز بنا کر رن آؤٹ ہو گئے۔

کارڈف میں کھیلے جانے والے میچ میں پاکستان نے ٹاس جیت کر انگلینڈ کو پہلے بیٹنگ کی دعوت دی، جس نے مقررہ 50 اوورز میں نو وکٹوں کے نقصان پر 302 رنز بنائے۔

پاکستان کی پہلی وکٹ 22 رنز پر گری جب اوپنر شرجیل 10 رنز بنا کر آؤٹ ہو گئے۔ اس کے بعد بابر اعظم اور اظہر علی نے سکور کو 76 رنز تک پہنچا دیا تو بابر 31 رنز بنا کر بولڈ ہو گئے۔ اسی اوور میں ایک رن کے اضافے کے بعد کپتان اظہر علی وکٹ کیپئر کے ہاتھوں کیچ آؤٹ ہو گئے۔

33 رنز پر کیچ آؤٹ ہونے پر اظہر علی نے رویو لیا لیکن فیصلہ ان کے خلاف گیا۔

انگلینڈ کی جانب سے جیسن روئے اور ایلکس ہیلز نے اننگز کا آغاز کیا جبکہ پاکستان کو پہلی کامیابی محمد عامر نے اوپنر ہیلز کو 23 رنز پر آؤٹ کر کے دلائی جن کا کیچ شعیب ملک نے پکڑا۔اس کے بعد 10ویں اوور میں حسن علی نے جوئے روٹ کو 9 رنز پر بولڈ کر دیا۔

92 کے مجموعی سکور پر مورگن عماد وسیم کی گیند پر انہی کے ہاتھوں ایک آسان کیچ آؤٹ ہو گئے۔

اس کے بعد روئے نے عمدہ اننگز کھیلتے ہوئے سٹوکس کے ساتھ 72 رنز کی شراکت داری قائم کی اور یہ شراکت اس وقت ختم ہوئی جب جارحانہ انداز اپنائے روئے 87 رنز پر محمد عامر کی گیند پر کیچ آؤٹ ہو گئے۔

آؤٹ ہونے والے پانچویں کھلاڑی بیئر سٹو تھے جنھیں عمر گل نے 33 رنز پر آؤٹ کیا۔

258 رنز کے مجموعی سکور پر حسن علی کی گیند پر سٹوکس 75 رنز بنا کر کیچ آؤٹ ہو گئے۔ حسن نے بعد میں آنے والے بلے باز ووکس کو 10 رنز پر بولڈ کر دیا۔ اگلے اوور میں محمد عامر نے ڈاؤسن کو دس رنز پر آؤٹ کر دیا۔

انگلینڈ کی 9ویں وکٹ ڈیوڈ ولی کی گری جنھیں حسن علی نے آؤٹ کیا اور یہ ان کی میچ میں چوتھی وکٹ تھی۔

ایک روزہ سیریز کے آخری میچ کے لیے پاکستانی ٹیم میں دو تبدیلیاں کی گئی۔

زخمی ہونے والے محمد عرفان کی جگہ محمد عامر اور سمیع اسلم کی جگہ شعیب ملک کو ٹیم میں شامل کیا گیا۔

انگلینڈ کی ٹیم میں بھی تین تبدیلیاں کی گئی۔

انگلش ٹیم میں معین علی، عادل رشید اور لیام پلنکٹ کی جگہ لیام ڈوسن، کرس ووکس اور مارک ووڈ کو کھلانے کا فیصلہ کیا گیا۔

خیال رہے کہ دونوں ٹیموں کے درمیان پانچ ایک روزہ میچوں کی سیریز میں انگلینڈ کو چار صفر کی ناقابل شکست برتری حاصل تھی۔

لیڈز میں کھیلے جانے والے چوتھے ایک روزہ میچ میں انگلینڈ نے پاکستان کو چار وکٹوں سے شکست دی تھی۔

اس سے قبل انگلینڈ نے نوٹنگھم میں تیسرے میچ میں 169 رنز سے شکست دے کر سیریز پہلے ہی اپنے نام کر لی تھی۔

لارڈز میں کھیلے جانے والے دوسرے ایک روزہ میچ میں انگلینڈ نے پاکستان کو چار وکٹوں سے جب کہ ساؤتھمپٹن میں کھیلے گئے پہلے ایک روزہ میچ میں انگلینڈ نے ڈک ورتھ لوئس فارمولے کے تحت پاکستان کو 44 رنز سے ہرایا تھا۔

تبصرے

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں