انسان بمقابلہ جانور

مائیکل فیلپس دنیا کے تیز ترین تیراک ہیں، اور انھیں ‘اڑتی مچھلی’ کہا جاتا ہے، لیکن کیا وہ واقعی تیزرفتاری میں مچھلی کا مقابلہ کر سکتے ہیں؟
ڈزنی نیٹ ورک نے یہ معلوم کرنے کے لیے فیلپس اور سفید شارک کے درمیان ایک سو میٹر کی ریس منعقد کروانے کا فیصلہ کیا۔
عالمی ریکارڈ ہولڈر فیلپس دنیا کی تاریخ کے تیز رفتار ترین تیراک ہیں اور وہ آٹھ سے دس کلومیٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے تیر سکتے ہیں، لیکن شارک کی رفتار ان سے کہیں زیادہ ہوتی ہے۔
مقابلے میں آسانی کے لیے فیلپس نے جنوبی افریقہ میں منعقد کروائی جانے والی اس ریس میں ‘مانوفن’ سوٹ پہنا جس سے تیرنے میں آسانی ہوتی ہے، لیکن اس کے باوجود وہ شارک کی ‘گرد’ کو بھی نہیں پہنچ سکے۔
سفید شارک مختصر وقفوں میں 40 کلومیٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے تیرنے کی صلاحیت رکھتی ہے۔

تبصرے

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں